5

سرکاری ملازمین کے لیے خوشخبری۔۔۔پنشن کے حوالے سے شاندار فیصلہ کر لیا گیا

لاہور(ویب ڈیسک) وفاقی حکومت نے سرکاری ملازمین کیلئے پینشن و دیگر مراعات کا نیا کنٹری بیوٹری پنشن سسٹم متعارف کرانے جبکہ ایک ارب ڈالر مالیت کے یورو بانڈ جاری کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔وفاقی حکومت نے آئندہ نئے بھرتی کیے جانیوالے سرکاری ملازمین کیلیے پینشن و دیگر مراعات کا موجودہ نظام ختم کرکے نیا کنٹری بیوٹری

پنشن سسٹم متعارف کرانے جبکہ ایک ارب ڈالر مالیت کے یورو بانڈ جاری کرنے کا فیصلہ کیا ہے جس کیلیے دس بینکوں کی جانب سے بڈز موصول ہوگئی ہیں، جن کا جائزہ لینے کے بعد دسمبر کے آخر تک یا جنوری میں یورو بانڈز جاری کئے جائیں گے۔وزارت خزانہ کے ذمے دار ذرائع کے مطابق پے اینڈ پنشن کمیشن آئندہ وفاقی بجٹ سے قبل اپنی سفارشات پر مبنی رپورٹ تیار کرکے وزارت خزانہ کو پیش کریگا اور توقع ہے کہ نئے بجٹ میں نئے ملازمین کیلئے پنشن کا نیا نظام متعارف کروا دیا

جائیگا جس کے تحت پنشن فنڈ قائم ہونگے اور ملازمین کی تنخواہوں سے کی جانیوالی کٹوتی اس فنڈ میں جمع ہوگی۔پنشن حکومتی خزانے کے بجائے اس فنڈ کی جانب سے ادا کی جائیگی تاہم نئے نظام کا اطلاق موجودہ سرکاری ملازمین پر نہیں ہوگا۔ اس اقدام کا بنیادی مقصد حکومت کے پنشن کی مد میں اخراجات کو کنٹرول کرنا ہے۔دوسری جانب ایک اور خبر کے مطابق وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار نے کہا ہے کہ پی ڈی ایم کا غیر فطری اتحاد اپنے منطقی انجام کی جانب بڑھ رہا ہے، غیر فطری اتحاد کی داغ بیل اپوزیشن رہنماؤں نے اپنے بدعنوانی کے داغ چھپانے کیلئے ڈالی ہے۔وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار نے اپنے بیان میں کہا کہ اپوزیشن اتحاد جس عجلت میں بنا، اتنی ہی تیزی سے یہ ختم ہو رہا ہے،

ماضی میں قومی وسائل بے دردی سے لوٹنے والوں کے چہرے قوم کے سامنے آشکار ہو چکے ہیں، لوٹ مار کا دور قصہ پارینہ بن چکا ہے، ماضی میں قومی خزانے پر بے دردی سے ہاتھ صاف کئے گئے۔عثمان بزدارنے کہا کہ سابق دور میں لوٹ مار کر کے ذاتی تجوریاں بھری گئیں، وزیراعظم عمران خان نے بدعنوانی کے بڑے بڑے بت بے نقاب کئے ہیں، 22 کروڑ عوام جانتے ہیں کہ آج ملک میں شفاف ترین حکومت ہے۔

Reference:Hassan Nisar

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں